March 2012| مارچ 2012
 
   

پیٔنڈ پُرن


امین کامل

 

’بد معاش، بے حیا۔ گرِ ہے بینہِ جوراہ چھے تمہ نے کٔرۍزِہے ٹھتھہ۔‘ رحت گٔیہِ ہاپژ ہش سُلہ گورنِس نیچوس اگادِ، کتھ تام وُلٹہ وپریبہ ٹھٹھس پٮٹھ۔ یمن برونہہ برونہہ یم ز ژور گریسۍ پکان ٲسۍ، تم پھیرۍ واپس۔ رحتہِ کوٚرکھ مٹھ مدار تہ سُلہ گورنس نیچوس ژ؟نٮکھ تھۅکہ پونشہ۔ خبر چھا ابسۍ ابسۍ پٲزار تہِ ما والہ ہنس ہرگاہ نہ تمن دیوان صٲبس استقبال کرنچ لار آسہِ ہے۔
رحتہِ اوس کھاندر پتہ یہِ گۅڈنیک ٹھٹھہ ۔ یہِ ٲس لۅکچار پٮٹھہ امہِ رنگۍ گٲمۍ گامس منز بتھۍ تکر گنزراونہ یوان۔ أمس ٹھٹھہ کرُن گیاو نار کانگرِ اتھہ ژھنُن۔
دیوان صٲب اوس امہِ دۅہہ گۅڈنچہِ لٹہِ اتھ گامس اندر پننس مٲلۍ میراثس نظر گذر دِنہِ آمت۔ یہِ اوس أکس تھٔدس گُرس پٮٹھ سوار۔ گریسۍ ٲسۍ أمس سلامہ کران۔ رُمہ ریشن آے وندان تہ پزِ اپزِ بتھٮن پٮٹھ خۅشی ہند رنگ اننچ کوشش کران۔ سلہ گوریُن نیچو اوس نہ تیوت دیوان صٲبس سنیومت یوت تس رحتہِ ہنز یہِ بےٚ عزتی آمہِ تیلکۍ پٲٹھۍ ٲس تیلان۔سُہ اوس سونچان زِ اد سہ ؤری چھُہ تریہ ہتھ تہ شیٹھ دۅہ۔
دیوان صٲب اوس اۅبر گۅبر سانے پرٮتھ کاشکارس سلامہِ جواب دوان۔ یہِ اوس پرٮتھ مردس کیو زنانہِ پور پٲٹھۍ سام ہیوان۔ کاشکار تہِ ٲسۍ أمس کلہ پٮٹھہ نلس تام جٲیز ہٮوان تہ أہندِ خۅے خصلتک انداز کران۔ رحت تہ تسنز بُڈ موج تہِ آسہ پننہِ پینجہِ پُرنہِ ہند أہندس بُتھس پٮٹھ فٲصلہ ژھاران۔ تمہ آسہ برنزس منز ہتھ گز کھسان تہ ہتھ گز وسان۔
دیوان صٲب اوس نہ اوٚت تام زانہہ تہِ پننٮن چکن پھیورمت۔ امیک وجہ اوس نہ یہِ زِ یم ٲسۍ شہرس اندر بسان۔ بلکہِ یہِ کٲم اوس اہند مول کران، یس بوٚڈ دیوان صٲب ٲۍ ونان۔ یہِ اوس پانہ لۅکُٹ دیوان صٲب تہ کتھ تام کالجس منز تعلیم پران۔ وۅنۍ ییلہِ أہند مول ہالہِ گندان گندان کِتھہ تام پٲٹھۍ زنگہِ نشہِ گوٚو، أمس لوٚگ نہ تعلیم ترٲوتھ پننٮن چکن واتنس چار۔
رحتہِ اوس پٔتم ہرُد کھلس کٔرتھ مول گذریومت۔ پانس زیُٹھ بوے اوسس مٲلس برنوٹھے پنجابہ چہِ میژِ بزۍ گومت، یوٚت سُہ باقے گریستٮن ہندۍ پٲٹھۍ وند کٮن پانژن رٮتن مزوٗرۍ محنت کرنہِ اوس گژھان۔ رحت تہ أہنز موج ٲس أمۍ بناوتن پتھر پٲومژ۔ یم تہِ ٲسۍ باقے گریستٮن ہندۍ پٲٹھۍ دیوان صٲبنۍ کاشکار۔
رحتہِ ہندۍ مٲلۍ یُتھے أچھ وچہِ، أہنزِ ماجہِ لٔج پگہچ فکر۔ ہرگاہ چکدارن بییس کٲنسہِ کاشکارس یہند یہِ زمین لاگُن دیُت، یمن چھُہ لامحالہ پینجہِ پُرنہِ نشہِ اتھہ چھلُن۔ چکدار ما دِیہِ یمن مفتس منز لسنۍ بسنۍ کِژ جایہِ کھۅپر۔ رحتہِ ہنزِ ماجہِ آو یہِ زمین تہ پینڈ پُرن بچاونک اتُے طریقہ بوزنہ۔ سُہ گوٚو یہِ زِ تس پزِ رحتہِ گر پٮٹھ انُن، اگرچہِ یہِ کٔرتھ تہِ ٲس پتو لاکن کتھ چکدارس پٮٹھے واتان، تکیازِ تمۍ اوس یہِ زمین أہندس خاوندس لاگُن دیتمت۔ تس پتہ گژھہِ وۅنۍ أہندس زامترس لاگنک اجازت دِیُن۔ رحتہِ ہنز موج ٲس اتھ یی سونچان زِ گۅڈ گژھہِ گرس اندر لاگنے کر وُن انسان آسُن، پتہ گوٚو اد چکدارس پوژ کسابہ ترٲوتھ اجازت ہیوٚن۔ تمہِ دیُت دچھُن کھووُر سٮٹھا ووٚن مگر قادر دولس ورٲے آس نہ بییہِ کانہہ تہِ درینٹھۍ۔
گامس اندر یمۍ یہِ کتھ بوز زِ رحتہِ سپدِ قادر دولس ستٍۍ نیتھر تمۍ دِژ کنہِ رِکھزِ اتھ کتھہِ آسہِ پگہے ژھٮن۔ سۅ کریا قادر دولس ہِوس بےٚ شورش تہ ہفچافس ستٍۍ بستی۔ أہنزِ ماجہِ تہ ٲس زال زِ یہِ رانٹھ گٔژھ دۅسہِ کھسہ نی۔ مگر رحتہِ ییلہِ زبر پٲٹھۍ خاوندس مٲل بوٚر سٲری گٔے حٲرانہ۔
گامس منز واتنہ پتہ داہہِ بہہِ دوٚہۍ ہیوٚتدیوان صٲبن کاشتہ بدلی ہند تلاش تُلُن۔ یہِ زن ہر کانہہ چکدار ؤہرۍ دۅیہِ ؤہرۍ کران چھُہ روزان۔ امہِ ستٍۍ چھُہ نہ کاشکارس کُنہِ زمینہِ ٹکرس مستقل کاشت گژھان۔ مستقل کاشتہ ستٍۍ چھُہ کاشکار زمینک نصف مٲلک بنان۔ بییہِ چھُہ کاشتہ بدلی ستٍۍ چکدارس أکس زمین نتھ بییس دِنس منز رشوت رٹنک تہِ موقعہ میلان۔ ییلہِ چکدار سندۍ معتبرن امہِ کاشتہ بدلی ہند اطلاع گریستٮن دیُت، گٲمۍ گامس سپز دُہ ژھیوے۔ سٲری لوکھ، زنانہ کیو مرد، گٔے معتبر سندس مکانس برنٹھہ کنہِ ویرِ وارس جمع۔ پرٮتھ کٲنسہِ ہندس بتھس ٲسۍ ومیذکۍ تہ خوفکۍ جذبات یکجا وۅتلتھ ژھایہِ گتۍ کران۔ سُلہ گوریُن نیچو تام اوس مٲلس ستٍۍ أکس ویرِ تل کۅکر پوتس سمب مۅژیومت۔ حالانکہِ تس ٲسۍ نہ فلک تہِ فکرِ کھسان۔
دیوان صٲب اوس معتبر سندس مکانس منز دارِ پٮٹھ کمامہ سان بہتھ۔ کاغذ قلم اوسس برونٹھہ کنہِ، یمہِ ستٍۍ سُہ یہندس نصیبس ادلہ بدل اوس کران۔ بتھہِ سیوٚد لبہِ پٮٹھ ٲسس ’لکشمی دیوی‘ ہنز رنگدار تصویر جافرۍ مالہ ترٲوتھ اویزان۔ دارِ بۅنہ کنہِ ویرِ وارس منز اوس معتبر دیوان صٲبنۍ روبدار تہ نرم آواز گریستٮن تام زور زور واتہ ناوان۔ یہِ ممعتبر اوس جاگیرک فصل، اد سُہ یہِ کینژھا آسہِ ہے، چکدارس تام واتہ ناوان۔
گریستٮو ہیوٚت نوِ کاشتہ بدلی ہند فٲصلہ بوزُن۔ اکھ وۅشلیوو تہ بیاکھ زردٮو۔ عمہ بیاریُن تہ سُلہ گوریُن زمین اوس سٲرۍ سے گامس منز سر ماننہ یوان۔ سُہ توٚر قادر دولس تہ مۅمہ پڈرس۔ یہند ؤسۍ زمین توٚر ہُمن دۅن لاگُن۔ عمہ بیٲرس تہ سُلہ گورس پھیور یہِ بوزتھ موتُن۔ مگر زیوِ پٮٹھ ہیوٚککھ نہ أنتھ۔ سُلہ گورِ نس نیچوس وۅژھایہِ ہٮنگہ مگر مٲلۍ دِتُس نہ ٲس مژراونہ۔
مردن ستٍۍ ستٍۍ آسہ زنانہ تہِ پانہ وٲنۍ سسرِ گُسرِ کران۔ عمہ بیارنۍ نۅش تہ سُلہ گورنۍ زنانہ آسہ پنن مایہِ دار زمین اتھہ منز نیرنس پٮٹھ اتھہ موران۔ یمن اوس دیوان صٲبن مول یاد پیومت، یُس تہنزن نظرن منز أمس مقابلہ انسان اوس۔ یمہ آسہ رحتہِ تہ مۅمہ پڈرنہِ بینہِ خطجہِ کھن نس لٔدۍ لٔدۍ وچھان۔ رحتہِ ہنز موج ٲس نہ خدایس شکرانس پوشان۔ تس ٲس نہِ پژھ یوان زِ دیوان صٲبس آوا پزۍ پٲٹھۍ تسندِ زار پارُک عار۔ قادر دولہ تہ مۅمہ پڈڑ ٲسۍ نہ کُنہِ روٹان۔ تم ٲسۍ پننہِ پننہِ شایہِ سونچان زِ عمہ بیٲرۍ تہ سُلہ گورۍ اوس نۅشہِ تہ زنانہِ ہنزِ پۅتہِ پٮٹھ پرٲنس دیوان صٲبس نشہِ یہِ اصل زمین روٚٹمت۔ مگر ٲخر چھُہ خداے وچھان۔
کاشتہ بدلی ہند فٲصلہ مۅکلیوو۔ سٲری گریسۍ درایہِ ویرِوار منز گام کُن۔ یم ٲصۍ اتھ سٲرۍ سے ادلا بدلی پٮٹھ تبصر کران۔ سُلہ گوریُن نیچو اوس أکۍسے أکۍ سے ونان زِ ہیو امیک وجہ کیا با چھو رحت تہ خطج۔ مگر کانہہ اکھاہ اوسس نہ پژھ کران۔ تم ٲسس تور ونان زِ مۅمہ پڈڑ نہِ بینہِ خطجہِ ہند ونہو مگر رحتہِ ہند چُھہ نہ سوالے پٲد سپدان۔
دیوان صٲب اوس مٲلۍ سندۍ پٲٹھۍ ریتۍ پچھۍ اور یوان تہ کینژن دۅہن اتہِ روزتھ بییہِ واپس شہر گژھان۔ وقت گوٚو گذران۔ ہردکۍ دۅہ وٲتۍٔ۔ تم تہِ مۅکلیٚۍ۔ وند ژاو تہ أتھۍ ستٍۍ آو کشیرِ پٮٹھ قبٲلھ خشار ۔ یتیک سورُے نظام بدلیوو۔ انسان بدلیۍ۔ انسانن ہندۍ ذہن بدلیۍ۔ بدلے جوش تہ بدلے نظر ہیژن پٲد سپدنۍ۔
دیوان صٲب ہیوٚک نہ دۅن ؤرۍین اور کینہہ تہِ یتھ تکیازِ تہند گف اوس زِ ییلہِ انسانو ژۅپٲرۍ مٔتۍ آب آسہِ چیوٚمت، بٔڈ دانٲیی چھیہ بر نٮبر نہ قدم کڈُن۔ دۅن ؤرۍین ہندس اتھ دورانس اندر آو چکدارن ہند زمین کاشکارن اندر تقسیم کرنہ۔ اگرچہِ تمن تہِ آوکم قلیل زمین گذار خٲطر تھاونہ ، یُس تمو پننہِ مرضی موجوب ہر کُنہِ جایہِ پانے روٚٹ۔ دیوان صٲبن اوس باقے چکدارن ہندۍ پٲٹھۍ اصل تہ مایہِ دار زمین رٔٹتھ پننہِ گذارک حصہ پور کوٚرمت۔ اچ کنۍ اوس قادر دولہ تہ مۅمہ پڈر وُنہِ تہِ أہندۍ کاشکار روزان۔ اگرچہِ وۅنۍ اوس تمن صرف ژوریم حصہ فصل أمس کُن ادا کرُن۔ بییہِ اوسکھ نہ قونونہ وجب یہِ پھرٮٹھ رودمت زِ دیوان صٲب کیا ہیکہِ پرٲنۍ پٲٹھۍ کاشتہ بدلی کٔرتھ۔
ہردکۍ دۅہ یُتھے وٲتۍ، دیوان صٲب پیوٚو یمن دۅن گرن نشہِ فصلک پنن حصہ وصول کرنہ خٲطر گامس اندر وٲتتھ۔ أمس نہ اوس وۅنۍ کانہہ سلامے کران تہ نہ اوسس رُمہ ریشُن آیی وندان۔ یہِ اوس خجل زد ہیوٗ پٲنۍ پانس ستٍۍ مندچھ مندچۍ قدم تلان۔ راتھ تام یُس زمین أہندٮن ستن پیرٮن ہند اوس، تتھ کُن اوس نہ أمس وۅنۍ وچھنک تہِ اختیار رودمت۔ أمس أسۍ وٲنجہِ سلاخ گژھان تہ جگرس کبابہ سپدان۔
رحت ٲس خاوندس کیت بتہ اننہِ گر کُن گژھان زِ تس گوٚو دیوان صٲب نظرِ یُس مۅمہ پڈرنس کھلس کُن اوس پکان۔ دیوان صٲبس تہِ پییہِ أمس کُن نظر۔ رحتہِ اوس برونٹھمہِ کھۅتہ تہِ زیادے شانہ پنہ کوڈمت۔ تمہِ گٔنڈ رژھہِ ٲکس أمس کُن دوری مُدے۔تو پتہ ژکنییس بمہ تہ کُنی دور نتھ ژٔج گر کُن خاوندس کیت بتہ اننہِ۔
رحتہِ اوس صبحہ پٮٹھے دادِ ستٍۍ کلہ پھٹان مگر وۅنۍ زن نیوکھ یہِ تس فیش دِتھ۔ تمہِ دِتۍ نالکۍ مل بٔرتھ پلو وِنجہِ کُن دٲرتھ تہ پھٹجہِ اکہِ منز کڈنۍ مہرنہِ پانکۍ نوۍ پلو۔ یم ژھننۍ وۅشلۍ وۅشلۍ نٲلۍ۔ مس تھووُن بانبرِ سانے شیرتھ تہ ژلہ لارِ درایہِ خاوندس کیت بتہ ہٮتھ کھلس کُن۔ یہِ ٲس تیز تیز پکان۔ أمس ٲسۍ اکہِ اکہِ تم دۅہ أچھن تل یوان یم امہِ پینڈ پُرن بچاونہ خٲطر دیوان صٲبس ستٍۍ فنا ٲسۍ کٔرۍمتۍ۔ أمس ہیوٚو سُہ وق تہِ یاد ییلہِ یہِ اکہِ دۅہہ دپہرس بٲگۍ دیوان صٲبس نشہِ ژایہِ تہ تتہِ وُچھن خطج مس شیران تہ کلہ دٔج گنڈان۔ أمس ییلہِ خطجہِ کُن تہ تس أمس کُن نظر پیٚۍ، یمن آیہِ دۅنونۍ رب زن متھنہم۔ دیوان صٲبس ژوٚل یہِ ڈیشتھ ٹھہہ ٹھہہ کٔرتھ اسُن نیرتھ۔ تٔمۍ کٔر أمس نرِ تھف تہ ووٚننس ۔ ’تُہۍ کیازِ مندچھیو اکھ أکس وچھتھ۔ میہ بناوِمو تُہۍ پانہ وٲنۍ وٮسہ۔‘
یمہ نے کتھن سنیمژ وٲژ رحت کھلس منز، مگر دیوان صٲب گوس نہ کُنہِ تہِ نظرِ۔ امہِ کوٚڈ ڈاکرِ منز بتہ بانہ تہ تھووُن قادر دولس برونٹھہ کنہِ۔ قادر دولہ گوٚو حٲرانہ زِ امہِ کتھ پٮٹھ چھُہ ٲدیک مل بوٚرت پھٮرن کٔڈتھ پانس یہِ کھکھاسہ کوٚرمت۔ تمۍ کوٚرس نا ستہِ مکرٮو دندو اسان اسان ٹھتھہ۔
’ژیہ کتھ پٮٹھ از ڈایہِ ؤہرۍ مہرنہِ پان یاد پیومت۔ بہ آس بڈان مگر ژ چھکھ تژھے۔‘
رحت وۅشلییہِ تہ بانہ نز بتہ لۅکھر تُلتھ دژنس یکدم ٲسس بٔرتھ۔’چھکھ نا بڈیومت۔ تُل کھیہ بتہ۔ بۅچھہِ چھے لٔجمژ۔‘
رحتہِ ہنز موج ٲس دانٮس سُرن مازان۔ تمہِ وُچھ یہِ قادر دولس بتہ لۅکھر آپران۔ تمہِ ڈٲج نظر۔ قادر دولن ہیژاو بییہِ تہِ کیاہ تام ونُن زِ رحت گٔییہِ تھوٚد ؤتھتھ تہ ژٔج کھلہ منز نٮبر۔ یہِ ٲس دیوان صٲبس کھلہ نیبرے سمکھن یژھان۔ أمس آسہ پننہِ پانہ پٮٹھہ نار بریہہ وۅتھان تہ نکہ وٲرۍ ٲسس شپۍ واو کران۔ یہِ ٲس کھلس اُکن پہن وٲژمژے زِ دیوان صٲب پیوس بتھہِ۔ دیوان صٲبن ییلہِ ٲدچ مل بٔرژ رحت تژھے مہرنۍ ہش پانس برونٹھہ کنہِ استاد وُچھ، سُہ ووٚتھُس مذاقہ پٲٹھۍ۔
’میٲنۍ راجہ رٲنۍ چھا وارے؟ گوٚو اد چھُے ژیہ وُنہِ تہِ میون سریہہ باقے۔‘
’بدمعاش، بے حیا۔ گرِ چھے نا موج بینہِ تٔسۍ کٔرۍزِ ہے ٹھٹھہ۔‘ رحت گٔیس ہاپژِ ہندۍ پٲٹھۍ اگادِ۔ دیوان صٲبس باسیوٚو زمین پھٹان تہ پانس نٮنگلان تہ رحتہِ ہنز موج ٲس أہندۍ یم مہرنۍ پلو لاگنس پٮٹھ کھلس اندر سونچان زِ تمہِ دۅہہ نے قادر دولس ستٍۍ نیتھر کٔرتھ کور لاج تٹاوِہم، یہِ پینڈ پرن کتہِ آسہِ ہم بچیمژ۔